ریکی کس نے شروع کی؟

کہا جاتا ہے کہ ریکی کے فوائد لامحدود ہیں ۔ یہ تمام درجوں میں شفایابی کے لئے معاون ہے یعنی جسمانی، ذہنی ، جذباتی اور روحانی تمام قسم کے درجات میں معاون ہے۔ یہ جسمانی اور جذباتی رکاوٹوں اور دباؤ کو ختم کر کے مکمل سکون کی حالت پیدا کرتی ہے۔ یہ جسم کو ہلکا پھلکا کر دیتی ہے اور اس سے انسان کو بری عادت سے بھی نجات مل جاتی ہے۔
ریکی کی مدد سے ہماری تخلیقی قوت میں اضافہ ہوتا ہے اور یہ یاداشت میں بہتری لانے لئے بھی معاون سمجھی جاتی ہے۔ کہا یہ جاتا ہے کہ ریکی سیکھنے والے یا اس کو برائے کار لانے والے اپنے غصے اور خوف پر قابو پانا سیکھ جاتے ہیں۔ اس علاوہ یہ جذباتی عدم استحکام ، بے خوابی ، موٹاپا ، سستی اور کاہلی کے خاتمے کے لئے بھی بہتر جانی جاتی ہے۔

ریکی کی تاریخ اسطرح بیان کی جاتی ہے کہ ڈاکٹر میکاؤ یوسوئی اس شفائی تکنیک کے دریافت کنندہ ہیں۔ جسے انھوں نے ریکی کا نام دیا۔ حضرت عیسیٰ علیہ السلام المعروف یسوع مسیح کے معجزات کے پس منظر اور روحانی پیشوا مہاتما گوتم بدھا کے بھی پیش نظر پراسراریت کی تلاش میں ڈاکٹر میکاؤ یوسوئی نے ریکی کی روشنی کو دریافت کیا۔ اس کے ذریعے آپ نے ریکی سے متعلقہ مختلف نشانات یعنی سمبلز کی وضاحت کی۔
اس سے قبل کے میں آگے بڑھوں ایک بات کی تصحیح اس ہی جگہ کر دوں ۔ وہ تمام ویب سائٹس اور انگلش اردو کتب جن میں ریکی کی تاریخ بیان کرتے وقت حضرت عیسیٰ علیہ السلام کا ذکر کیا جاتا ہے یہ بات بالکل غلط ہے اور سختی کے ساتھ کہتا ہوں کہ اس کے شواہد دور دور تک نہیں ملتے اور اس بات پر مسلمان اور کرسچئن ہیلرز بھی متفق ہے کہ آپ علیہ السلام کی شفائی طاقت ریکی نہیں تھی۔ یہ بات بھی واضح کر دی جائے کہ تواریخ ہم تک آتے آتے اپنا اصل چہرہ کھو چکی ہیں۔ آج بہت سی ایسی باتیں اور اصول بھی ڈاکٹر یوسوئی سے منسوب کئے جاتے ہیں جو در حقیقت ان سے منسوب نہیں یا ان کی باتوں کو غلط سمجھا گیا۔ جس طرح ڈاکٹر یوسوئی کا یہ کہنا کہ ہیلینگ دیتے وقت پیسہ لازمی لینا چاہئے کو آج ایک کاروبار بنا لیا گیا۔ جبکہ اصل مقصد یہ تھا کہ سامنے والا اس انرجی کی قدر کرے جو اس نے حاصل کی۔ یہاں انھوں نے یہ بھی نہیں کہا تھا کہ ریکی ہزاروں روپیہ لیکر سکھائی جائے یا ہر سیشن کے پیسے چارج کئے جائیں۔ لیکن ان کی اس بات کو حوالہ بنا کر ریکی ماسٹرز نہ صرف کاروبار چمکا رہے ہیں بلکہ جس کو سکھاتے ہیں ان کو یہ تاکید کر دیتے ہیں کہ آپ پیسے ضرور لیں کیوں کہ ڈاکٹر یوسوئی نے کہا تھا۔

تو جب ڈاکٹر یوسوئی کا ضمیر روشن ہو گیا تو آپ نے کوئیٹو کے علاقے میں لوگوں کو جسمانی امراض سے نجات دلانے کے لئے ریکی دینا شروع کیا ۔ بتدریج ریکی سے شفا کے جسمانی پہلوؤں میں روحانی شفا کا اضافہ کرنے کے لئے ڈاکٹر یوسوئی نے پانچ روحانی اصولوں کا اضافہ کیا۔

 صرف آج کے دن کے لئے فکرمند نہیں رہیں۔
صرف آج کے دن کے لئے غصہ نہ کریں ۔
صرف آج کے دن کے لئے اظہار تشکر کا رویہ اپنائیں۔
صرف آج کے دن کے لئے، اپنے آپ سے ایمان دار رہیں۔

صرف آج کے دن کے لئے ہر ذی روح سے پیار محبت اور عزت سے پیش آئیں۔

انھوں نے یہ بھی کہا کہ جو شخص ریکی کو اچھا نہیں سمجھتا اس کو ریکی مت دیں۔ ڈاکٹر یوسوئی کی وفات کے بعد آپ کے سب سے زیادہ عقیدت مند نے آپ کے کام کو جاری رکھا۔ جو 47 سالہ ڈاکٹر ہایاشی نیوی کے ریزرو آفیسر تھے۔ ڈاکٹر یوسوئی کی وفات کے بعد ڈاکٹر ہایاشی ریکی کے گرینڈ ماسٹر بن گئے ۔ انھوں نے ٹوکیو میں اپنے کلینک سے تعلیم اور شفا کی روایت کو جاری رکھا۔

لیکن ہوایاؤتاکاتا نامی ایک خاتون نے ریکی کے ذریعے خود ہی مختلف بیماریوں سے شفا حاصل کی ۔ وہ  ریکی کو پوری دنیا میں پھیلانے میں معاون ثابت ہوئی اور اسے مقبول بنا دیا۔